43

جہاں ایک شخص کی قربت ملی ہے : : فری ناز خان

جہاں ایک شخص کی قربت ملی ہے
وہیں چاہت وہیں الفت ملی ہے

تکلم ان کی فطرت کا تقا ضا
ہمیں تو کم گوئی کی عادت ملی ہے

رخ روشن پر گیسو منتشر تهے
کہ جیسے سحر کو شب کی سنگت ملی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں