70

جب بهی مجهہ کو وہ یاد آتے ہیں : غزل : غزالہ جلیل راو

جب بهی مجهہ کو وہ یاد آتے ہیں
شاخ پر پهول مسکراتے ہیں

بات مجهہ سے نہ کر بہاروں کی
غم کے موسم بہت رلاتے ہیں

پهول ,خوشبو یہ, تتلیاں , جگنو
خواب میں روز میرے آتے ہیں

یاد تیری مجهے جگاتی ہے
چاند تارے کہاں جگاتے ہیں

سوچتی ہوں غزل سگے بهائی
گهر میں دیوار کیوں اٹهاتے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں